ڈالر کی قیمت کتنی رہ گئی

ڈالر کی قیمت 22 ماہ کی کم ترین سطح پر آگئی ، انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر مزید سستا ہو گیا اور ڈالر کی قیمت 154 روپے سے کم ہو کر 153 روپے 55 پیسے ہو گئی۔ ملک بھر میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر کا تیزی سے بحال ہونے کا سلسلہ جاری ہے۔ امریکی کرنسی

ایک مرتبہ پھر 55 پیسے سستی ہو گئی ہے۔اسٹیٹ بینک آف پاکستان کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر جاری کردہ اعداد و شمار کے مطابق رواں ہفتے کے پہلے کاروباری روز کے دوران انٹر بینک میں روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالر مزید 55 پیسے سستا ہو گیا اور قیمت 154 روپے 59 پیسے سے کم ہو کر 154 روپے 04 پیسے ہو گئی ہے۔ دوسری جانب اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید40پیسے کی کمی سی154.60روپے سے گھٹ کر154.20روپے اور قیمت فروخت154.90روپے

سے گھٹ کر 154.40روپے ہوگئی ۔فاریکس رپورٹ کے مطابق یورو کی قیمت خرید181روپے سے گھٹ کر 180روپے اور قیمت فروخت183روپے سے گھٹ کر182روپے ہوگئی جب کہ برطانوی پاونڈ کی قیمت خرید211.80روپے سے گھٹ کر211.50روپے اور قیمت فروخت213.80روپے سے گھٹ کر213.50روپے ہوگئی ۔ چیئر مین فارن ایکسچینج کرنسی ڈیلرز ملک بوستان نے کہا ہے کہ روپے کے مقابلے میں

ڈالر کا سستا بہت اہم ہے، قوی امکان ہے کہ آئندہ ماہ کے آخر تک یہ سلسلہ برقرار رہے گا۔انہوں نے اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے بتایا کہ امریکی ڈالر کی قیمت میں کمی کی تین بڑی وجوہات ہیں، وزیراعظم عمران کی طرف سے جاری کردہ پروگرام ڈیجیٹل روشن پروگرام، ریکارڈ ترسیلات زر کا موصول ہونا اور عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف)کی طرف سے پاکستان کو قرض پروگرام کی دوسری قسط کا موصول ہونا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.