رمضان کا سب سے بڑا عمل۔ مو ت ایسی کہ کبھی حساب ہی نہیں ہو گا۔

رمضان کی عظمت و فضیلت یہ ہے کہ فرض ستر فرض کے برابر ہو جا تا ہے اور نفل فرض کے برابر ہو جا تا ہے اللہ جہ نم کے دروازوں کو بند کر دیتا ہے جنت کے دروازوں کو کھول دیتا ہے عرش اس کا پہلے آسمان پر آ جا تا ہے ۔ شیط ان سارے قید ہو جا تے ہیں ساری کا ئنات سمندر کی مچھلیاں اور زمین کی چیو نٹیاں روزہ رکھنے والوں کے لیے دعا کر تی ہیں

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

جنت کو روزانہ روزے والوں کے لیے سجا یا جا تا ہے اور اللہ اس سے کہتا ہے میرے بندے آرہے ہیں تجھ میں ہمیشہ رہنے کے لیے۔ اللہ کی طرف سے چوبیس گھنٹے ایک اعلان ہو تا رہتا ہے کوئی بخشش مانگنے والا ہے کوئی توبہ کرنے والا ہے۔کوئی معافی مانگنے والا ہے کوئی بھی سائل ہے جو بھی مانگے ایک فرشتہ اعلان کر تا ہے کہ نیکی کر نے والے آ گے بڑھ تجھے بشارت ہو دوسرا فرشتہ اعلان کر تا ہے کہ برائی کر نے والا بس کر اور واپس مُڑ تو میری نبی ﷺکا فر مان ہے اگر لوگوں کو رمضان کی قیمت کا اندازہ ہو جا ئے تو یہ تمنا کر تے کہ سارا سال ہی رمضان ہو تا۔

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

رمضان میں جو مر جا ئے اس کی بخشش ہو جا تی ہے اس کا حساب نہیں ہو تا۔ حساب نہیں ہو تا تو کسی نے پوچھا کہ بعد میں ہو تا ہے میں نے کہا اللہ تعالیٰ کوئی ہماری طرح ہے۔ اللہ تو رحیم و کریم ہے۔ایک دفعہ چھوڑ دیا تو چھوڑ دیا ۔ ایسا نہیں ہے کہ ضمانت ختم ہو گئی ہے واپس آجا ؤ۔ جب اس نے ایک دفعہ کہا ۔ جاؤ ۔ تو مطلب ہے کہ جاؤ تو یہ بہت مبارک مہینہ ہے۔ پہلی تیاری کیا ہے کہ آج تک ہم سے جتنی خطائیں ہو ئیں کچھ زبان کی کوئی آنکھوں کی کوئی معاملات کی کوئی معاشرت کی ان سب سے ہم آج پہلی رات ہے توبہ کر یں دو بڑی مصیبتیں ایک غیبت ۔ ایک حسد ۔ تو ہم جتنے لوگ میری بات سن رہے ہیں ہم اپنے رمضان کی اتبدا ء کر رہے ہیں تو ان سب سے با ہر نکل آ ئیں۔ اللہ تعالیٰ کے نبی کہتے ہیں۔

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

 

کہ دن میں ستر دفعہ توبہ کر تا ہوں آپ تو معصوم پاک پاکیزہ اُمت کو سکھانے کے لیے۔ دوسری بات دنیا کا ہر انسان کسی وقت بھی توبہ کر سکتا ہے کہ نہیں؟کر سکتا ہے نا۔ کوئی پابندی تو نہیں ہے۔ تو جب ہر انسان کے بارے میں ہر وقت یہ توقع ہے کہ یہ تو بہ کر سکتا ہے تو پھر کسی بھی انسان کو مسلم کا ف ر حقیر سمجھنے کا کوئی جواز ہے آج وہ یہ کر رہا ہے رات کو توبہ کر لے کل توبہ کر لے وہ م و ت کے آخر لمحے میں توبہ کر لے تو میری حقار ت تو مجھے گرا دے گی اور وہ جنت کے مزے کر رہا ہوگا۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.