کرونا وائرس،درجنوں سکول مستقل طور پر بند۔۔۔!!!

کورونا لاک ڈاؤن کے باعث سکھر میں درجنوں اسکولز مستقل طور پر بند کر دیے گئے۔

سکھر میں کورونا وائرس کے باعث مسلسل تدریسی عمل معطل رہنے اور فیسوں کی عدم ادائیگی پرگلی محلوں کے 50 سے زائد اسکولز مالی اخراجات کا بوجھ برداشت نا کرسکے جس کے باعث پریشان حال مالکان نے مجبوراً اپنےاسکولز مکمل طور پر بند کردیے۔چیئرمین آل پاکستان پرائیویٹ اسکول ایکشن کمیٹی بشیر چناکانجی ٹی وی چینل سے

گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کم از کم 50 سے 100 کے درمیان اسکولز ایسے ہیں جو بند ہوچکے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ان اسکولوں کے جو اساتذہ بیروزگار ہوئے وہ الگ ہیں جب کہ ان کے ساتھ جڑے بہت سے کاروبار بھی بند ہوگئے ہیں۔آل پاکستان پرائیویٹ اسکول ایکشن کمیٹی نے

حکومت سے اپیل کی ہے کہ نئے آنے والے بجٹ میں پرائیوٹ اسکولز کے 25 فیصد طلبا کو اسکالر شپ دینے کا اعلان کرے تاکہ غریب طلباء تعلیم کے زیور سے آراستہ ہوسکیں۔رسید کی وصولی پر ڈھائی روپے چارج کئے جارہے ہیں جبکہ محض بیلنس معلوم کرنے پر بھی چارجز وصول کئے جارہے ہیں۔ اس ضمن میں

اسٹیٹ بینک کا کہنا ہے کہ مرکزی بینک نے اے ٹی ایم رسید جاری کرنے پر چارجز عائد کرنے کوئی ہدایت نہیں کی ہے،تاہم بینک اپنی خدمات کے عوض صارفین سے چارجز لینے میں آزاد ہیں، بینک جو بھی چارجز عائد کرتے ہیں وہ

شیڈول آفچارجز میں شائع ہوتے ہیں۔ ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ اسٹیٹ بینک نے بعض خدمات پر چارجز کی حد مقرر کی ہوئی ہے، بینک اپنی خدمات کے عوض چارجز وصول کرنے کے مجاز ہیں، بشرطیکہ وہ اسٹیٹ بینک کی کسی ہدایت سے متصادم نہ ہوں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *