پیر سے تعلیمی ادارے بند ،قیامت خیز گرمی کے بعد بڑا فیصلہ کر لیا گیا

پیر سے تعلیمی ادارے بند ،قیامت خیز گرمی کے بعد بڑا فیصلہ کر لیا گیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) جون میں گرمی کی شدت اپنی انتہا کو پہنچ گئی ہے۔ حکومت نےکئی ماہ کی بندش کے بعد اسی مہینے سکول کھولدیے تھے تاہم شدید گرم موسم کی وجہ سے سکولوں میں حاضر ہونے والے طلبا کی حالت

غیر ہونا شروع ہو گئی۔ چھوٹے بچوں کو نکسیر اوربے ہوشیجیسے مسائل کا سامنا ہو رہا ہے جس کی وجہ سے پرائیویٹ سکول مالکان اب محتاط ہوگئے ہیں اورانھوںنے از خود ہی سکولوں کو بند کرنے کا فیصلہ کرلیا۔ اسلام آباد کے نواحی علاقوں میں

کئی پرائیویٹ سکولز مالکان نے پیرسے سکولوںکو بند کرنے کا فیصلہ کرلیا ۔ان میں عائشہ
ایجوکیشن سسٹم، شاہین پبلک سکول، فاطمہ پبلک سکول، فیصل ماڈل سکول، لٹل اینجلز،دی گارڈینز سکو ل اورشہزاد پبلک سکول شامل ہیں۔ بتایا جا رہا ہے کہ

ان سکولوں میںداخل کئی بچوں نے طبیعت خرابی جیسے مسائل کے بعد سکول آنا چھوڑدیا تھا جس کی دیکھا دیکھی کئی دوسرے بچوں میں بھی خوف کی فضا پھیل گئی تھی۔دینےکی تجویز پیش کی ہے۔ جسکے تحت یکم جولائی سے یکم اگست تک

چھٹیاں دے دی جائیںگی۔نئے تعلیمی سال کا آغاز یکم اگست سے کیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم پنجاب نے آئندہ بین الصوبائی وزرائے تعلیم کانفرنس کیلئے تجاویز تیار کی ہیں، جس کے تحتپنجاب میں

جون میں امتحانات کا انعقاد کیا جائے گا، جبکہ تعلیمی اداروں میں جولائی میں موسم گرماکی چھٹیاں اور یکم اگست سے نئے تعلیمی سال کا آغاز کردیا جائے گا۔ لاہور سمیت

صوبے بھر کے سرکاری ونجی سکولوں میں آئندہ ماہ جون میں مرحلہ وار کلاسز کا آغاز کیا جائے گا جبکہ جون میں ہی دسویں تا بارہویں جماعت کے سالانہ امتحانات منعقد کیے جائیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.