”سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں 20 فیصد، پنشن میں 10 فیصد اضافہ، سکیل ایک سے 5 تک تنخواہ 25 ہزار روپے“

کراچی . سندھ حکومت کی جانب سے نئے مالی سال کے لئےسندھ کا بجٹ

آج پیش کیا جائے گا۔سندھ کاآئندہ مالی سال کابجٹ 14 کھرب سےزائدہوگا جس میں تعلیم کیلئے 240 ارب،صحت کیلئے 172 ارب جبکہ بلدیات کیلئے 119 ارب مختص کئے گئے ہیں۔بتایا گیا ہے کہ سندھ کے وزیر اعلیٰمرادعلی شاہ بطوروزیرخزانہ بجٹ خودپیش کریں گے،نئے سال کے صوبائیبجٹ میںسرکاری ملازمین کی تنخواہوں

میں 20 فیصد جبکہ پنشن میں10 فیصدتک اضافے کی تجویز دی گئی ہے۔سکیل ایک سے 5 تک کے ملازمین کی تنخواہ 25 ہزارماہانہ ہوگی۔سندھ کے بجٹ میں کوئی نیا ٹیکس نہ لگایا جانے کا امکان ہے اور بجٹ میں47 مختلف شعبوں کیلئے نئی ترقیاتی سکیمیں رکھی گئی ہیں،امن وامان کیلئے 115 ارب ،ٹرانسپورٹ کیلئے 14 ارب،انسدادکورونا

کیلئے 5.5 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔ بجٹ میں عوامی فلاح کے منصوبوں کیلئے 293 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں جبکہ کراچی کے میگاپروجیکٹ کیلئے 8 ارب ،ماس ٹرانزٹ کیلئے 28 ارب روپے رکھے گئے ہیں۔محکمہ داخلہ کے ترقیاتی منصوبوں کیلئے 9 ارب ،زرعی ترقیاتی منصوبوں کیلئے 7 ارب روپے دیئے جائیں گے۔نتیجے میں نوٹیفکیشن کے تحت

قائم مذاکراتی کمیٹی نے ایڈیشنل چیف سیکریٹری ڈاکٹر عثمان چاچڑ کی زیر صدارت پیر 14 جون کو دوپہر 2 بجے صوبائی بجٹ سے قبل مذاکراتی عمل شروع کرکے اپنا وعدہ پورا کرکے سگیگا کی قیادت اور ملازمین کا اعتماد بحال کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے 25 فیصد ڈسپیرٹی الائونس ریٹائرمنٹ پر گروپ انشورنس،

یوٹیکٹی الائونس، بروقت ریٹائرمنٹ واجبات کی ادائیگی، بذریعہ ٹریژری بلدیاتی ملازمین کی آن لائن تنخواہوں کی ادائیگی، سن کوٹہ، فوتگی کوٹے کا متعلقہ ادارے کو اختیار، ہیلتھ کارڈ، ہائوسنگ اسکیم، ڈیلی ویجرز، کنٹریکٹ ملازمین کی ان کے کنٹریکٹ شروع ہونے کی مدت سے مستقلی، اپ گریڈیشن، ٹائم اسکیل، سپریم کورٹ کے فیصلے

پر مکمل عملدرآمد کرتے ہوئے آئوٹ آف ٹرن پروموشن، ایکس کیڈر، او پی ایس کی واپسی سمیت دیگر مطالبات پر مکمل تیاری کرلی ہے۔ان شآء اللہ سندھ کے سرکاری اور بلدیاتی ملازمین اپنے مطالبات کی منظوری کے سلسلے میں جلد خوشخبری سنیں گے۔ سگیگا کے رہنمائوں انتظار چھلگری، پروفیسر یعقوب چانڈیو، نواب زین العابدین،

دائود انڑ، سید ذوالفقار شاہ، عیسیٰ سنگراسی، عبدالکریم میمن، جمیل احمد لغاری، دولہا یار خان جتوئی، عیسیٰ کورائی، عاشق حسین شاہ اور دیگر نے چیئرمین پی پی پی بلاول بھٹو زرداری کی جانب سے صوبہ سندھ کے ملازمین کی تنخواہوں میں 25 فیصد

اضافے کا اعلان کرنے کا خیرمقدم کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنے اعلان پر بجٹ میں عملدرآمد کروائیں اور ثابت کریں کہ وہ وفاقی حکومت اور تینوں صوبائی حکومتوں سے زیادہ اپنے ملازمین کے ہمدرد اور خیرخواہ و مزدوروں کے دوست ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.