مفتی عزیز الرحمان

مفتی عزیز الرحمان نے طالبعلم سے بدفعلی کا اعتراف جرم کرلیا۔پولیس کے مطابق

عزیز الرحمان نے دوران تفتیش اعتراف جرم کیا اور ملزم نے اپنا بیان ریکارڈ کرادیاپولیس کے مطابق ملزم نے بیان میں کہا یہ ویڈیو میری ہی ہے جو صابر شاہ نے چھپ کر بنائی، طالبعلم صابر کو پاس کرنے کا جھانسہ دے کر ہوس کا نشانہ بنایا اور ویڈیو وائرل ہونے کے بعد

خوف اور پریشانی کا شکار ہوگیا تھا۔ملزم عزیز الرحمان نے اعترافی بیان میں کہا کہ بیٹوں نے صابر شاہ کو دھمکایا اور اسے کسی سے بات کرنے سے روکا، صابر شاہ نے منع کرنے کےباوجود ویڈیو وائرل کردی، میں مدرسہ چھوڑنا نہیں چاہتا تھا اس لیے ویڈیو بیان جاری کیا جب کہ

مدرسے کے منتظمین اور مہتمم ویڈیو کے بعد مدرسہ چھوڑنے کا کہہ چکے تھے۔ملزم کے مطابق مقدمہ درج ہونے کے بعد ٹاؤن شپ، شیخوپورہ اور فیصل آباد میں شاگردوں کے پاس ٹھہرتا رہا، میری اور بیٹوں کی فون لوکیشن ٹریس ہوتی رہی، اس دوران میانوالی میں چھپا ہواتھا کہ پولیس نے گرفتار کرلیا۔ملزم نے

اپنے بیان میں مزید کہا کہ اپنے کیے پر بہت شرمندہ ہوں اور بھٹک گیا تھا۔یاد رہے مفتی عزیز الرحمان بیٹوں سمیت فرار تھا ۔تینوں بیٹوں سمیت کل پولیس کے ہاتھوں گرفتار ہوا۔سینئر اینکر پرسن حامد میر ٹویٹر پر ایک مرتبہ پھر کھل کر بول پڑے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر انہوں نے کہا ہے کہ

’’ہم نے تو ہمیشہ صرف لاپتہ پاکستانیوں کو بازیاب کرنے کی فریاد کی اور ملک دشمن کہلائے لیکن جو صاحبان اختیار ایک مصدقہ ملک دشمن دہشت گرد کلبھوشن کو بہت سی مراعات دے رہے ہیں ، اللُّٰہ انکا

بھلا کرے ان سے صرف اتنی گذارش ہے ایسا مہربانیاں لاپتہ پاکستانیوں پر بھی کر دیجئے۔ دوسری جانب وزیرخارجہ مخدوم شاہ محمودقریشی نے کہا ہے کہ بھارت جاسوس کلبھوشن یادیو

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.