بریکنگ نیوز!! سکولوں میں مزید چھٹیاں۔۔؟ صبح صبح بچوں اور والدین کے لیے بڑی خبر

اسلام آباد شدید گرمی اور حبس میں وفاقی وزارت تعلیم نے

سکولوں کو کھولنے کے احکامات جاری کر دیئے جس پر بچوں کے والدینمیں تشویش کی لہر دوڑ گئی والدین کاکہناہے کہ شدید گرمی میں وزارت تعلیم کے اس اچانک فیصلے سے بچوں کے بیمار ہونے کاخدشہ ہے- والدین کا کہنا ہے کہ

تعلیم مذاق نہیں ہے موجودہ حکومت کورونا کے بعد سے شعبہ تعلیم کو غیر سنجیدگی سے دیکھ رہی ہے جب جی چاہتا تعلیمی ادارے بند کردیتے جب دل کرتا کھول دیتے ہیں-

اول تا ہشتم جماعت کے لئے سکول کھولنے کے حالیہ فیصلے میں بھی کوئی پلاننگ اورسوچ نظر نہیں آرہی ہےدوسری جانب آرمی پبلک سکول اور نجی تعلیمی اداروں نے آن لائن امتحان لے کر سکول بند ہی رہنے دئیےجبکہ 2اگست سے نیا سیشن شروع کرنے کا اعلان بھی کر دیاہے-

فیڈرل گورنمنٹ ایجوکیشنل انسٹی ٹیوشنزکینٹ گیریژن ڈائریکٹوریٹ کے زیرانتظام ملکبھر کے تعلیمی ادارے اور ایف ڈی ای کے زیر انتظام تعلیمی ادارے اس شدید گرمی میں کھول دئیے گئے ہیں-ایف جی ڈائریکٹوریٹ نے طلباء کو اس شدت کی گرمی میں سکول بلالیا ہے

حکام کو اس موسم کی شدت کا کوئی احساس نہیں ہےکیونکہ یہاں غریب کا بچہ پڑھتا ہے اس لئے کوئی پرسان حال نہیں اوپر سے تپتی دوپہر میں حبس اور لو کے شدید موسم میں بچے سکول سے واپس آتے ہیں

والدین نے وفاقی وزیر تعلیم سے کہاکہ بچوں کی تکلیف کااحساس کیاجائے اور رحم کیا جائے والدین نے کہا کہ اگر امتحانات لینے ناگزیر ہیں تو امتحانات لے کر تمام سکول فوری بند کئے جائیں اور اس حوالے سے کوئی پالیسی جاری کی جائے-والدین نے

وزیراعظم عمران خان اور وزیر تعلیم شفقت محمود سے اپیل کی ہے کہ بچوں کی مشکلات اور شدید گرمی کو مدنظر رکھتے ہوئے وزارت تعلیم اپنا انوکھا فیصلہ فوری طور پر واپس لے اور امتحانات لینے نہ لینے کا فیصلہ جلد کرکے سکولوں کو بند کردے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.