سرکاری ملازمین کی موجیں جولائی کی 10 فیصد اضافی تنخواہ کے ساتھ50 فیصد سپیشل الاؤنس دینے کا نوٹیفکیشن جاری

لاہور) پنجاب حکومت نے پنجاب بھر کے 7 لاکھ سے زائد گریڈ 1 سے 19 کے افسران و ملازمین کو

25 فیصد سپیشل الائونس دینے کا نوٹیفکیشن جاری کردیا،سپیشل الائونس 10 محکموں کے افسران و ملازمین کو نہیں ملے گا جن میں پولیس، عدلیہ، ڈاکٹر، انجینئرز سمیت سول سیکرٹریٹ کے ملازمین شامل ہیں۔ بڑی عید سے قبل 7 لاکھ سے زائد افسران وملازمین 60 فیصد اضافی تنخواہ

وصول کریں گے کیونکہ جولائی کی تنخواہ کیساتھ 25فیصد سپیشل الائونس اور جون کے مہینے کا 25 فیصد سپیشل الائونس الگ سے ملے گا۔دوسری جانب بجٹ میں منظور کی گئی 10 فیصد اضافی تنخواہ بھی اس میں شامل ہوگی، جن ملازمین کو سپیشل الائونس نہیں ملے گا ان کی تنخواہ میں صرف 10 فیصد اضافہ ہوگا، محکمہ خزانہ

پنجاب نے سپیشل الائونس کے اجرا ء کا باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کردیا۔علاوہ ازیں پنجاب حکومت نے سپیشل الائونس کی فہرست سے 10 محکموں کے ملازمین کو نکال دیا ہے جن میںلاہور ہائیکورٹ اسٹیبلیشمنٹ ،اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ ،ڈاکٹر ،صوبائی محکموں کے انجینئرز ،پولیس ،سول سیکرٹریٹ اور

جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے ملازمین شامل ہیںواضح رہے کہ اس سے قبل ایک سال میں 120 دن پاکستان میں رہنے والا شہری شمار ہوتا تھا۔دوسری جانب قومی اسمبلی میں بجٹ اجلاس کے دوران کئی وزارتوں کے ضمنی مطالبات زر منظور کرلیے گئے۔وزارت دفاع کا 36 ارب 23 کروڑ روپے سے زائد

کا ایک اور کابینہ ڈویژن کے 17 ارب 32 کروڑ روپے سے زائد کے 7 مطالبات زر منظور کرلیے گئے۔وزارت توانائی کے 204 ارب 91 کروڑ روپے کے 3، وزارت تعلیم، قومی ورثہ اور ثقافت کے 8 ارب 72 کروڑ روپے سے زائد کے 8 ضمنی مطالبات زر منظورکیے گئے۔دوران اجلاس وزارت خزانہ کے 137 ارب 57 کروڑ روپے سے

زائد کے5،وزارت خارجہ کا 50 کروڑ 92 لاکھ روپے کا ایک ضمنی مطالبہ زر منظورکیا گیا۔اس موقع پر وزارت صنعت و پیداوار کے3 ارب 75 کروڑ روپے سے زائد کے 2،وزارت ہاؤسنگ وتعمیرات کے 13 ارب 88 کروڑ روپے سے زائد کے ضمنی مطالبات زر منظورکیے گئے۔اجلاس میں انفارمیشن ٹیکنالوجی کا 60کروڑ روپے سے

زائد کا 1،وزارت داخلہ کے1 ارب 36 کروڑ روپے سے زائد کے3 ضمنی مطالبات زر منظورہوئے۔وزارت قانون کے1 ارب 28 کروڑ روپے سے زائد کے3 مطالبات زر منظور کیے گئے،ان میں قومی احتساب بیورو (نیب) کا 43 کروڑ روپے سے زائد کا مطالبہ زر بھی شامل ہے۔اس دوران وزارت بحری امور کا 96 لاکھ روپے، وزارت انسداد منشیات کا 57 لاکھ روپے،

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *