حکومت نے فائدہ اُٹھا لیا، پوری قوم کو سرپرائز دے دیا گیا155 روپے والے ڈالر کی 75 روپے پر واپسی

ایک طرف پاکستان سٹاک مارکیٹ میں ایک مرتبہ پھر

تیزی واپس لوٹ آئی ہے، تیزی کے باعث حصص مارکیٹ کا 100 انڈیکس 487.79 پوائنٹس بڑھ گیا تو دوسری طرف روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں بھی مسلسل کمی واقع ہو رہی ہے۔ جس کی وجہ سے ملکی قرضوں میں بھی کمی واقع ہو گی۔ دوسری جانب

سابق وزیر اطلاعات خیبر پی کے شوکت یوسفزئینے کہا ہے کہ ڈالر کی قیمت بڑھنے اور روپے کی قدر کم ہونے سے فائدہ ہوگا۔تفصیل کے مطابق سابق وزیراطلاعات خیبرپی کے شوکت یوسفزئی نجی ٹی وی چینل پر ٹاک شو میں گفتگو کررہے تھے۔ ٹاک شو کے اینکر شاہزیب خانزادہ نے سوال کیا اگر روپے کی قیمت گر گئی اس سے

ملک کو فائدہ کیسا ہوسکتا ہے اور کہا کہ ایشیاء ڈویلپمنٹ بنک سے قرض لینے کر واپس بھی تو کرنا ہے؟ جس پر جواب دیتے ہوئے وزیر اطلاعات خیبر پی کے شوکت یوسفزئی نے کہا کہ جب واپس کرنا ہوگا تب دیکھ لیں گے فی الحال پاکستان کو فائدہ ہورہا ہے۔شوکت یوسفزئی نے مزید کہا کہ

بہت سے چینل نے میری بات کی توثیق کی۔ جب ہمیں ڈالر ملیں گے ایک ڈالر کے155روپے ملیں گے۔نجی ٹی وی کے اینکر نے پھر سے سوال کیا کہ جو قرض پہلے لئے تھے وہ بھی تو واپس کرنے ہیں؟ جس پر جواب دیتے ہوئے شوکت یوسفزئی نے کہا کہ

ہمیں ڈالر کی قیمت بڑھنے سے تین ارب روپے فائدہ ہورہا ہے۔ جو لو بی آر ٹی پروجیکٹ پر لاگت بڑھنے کی بات کررہے ہیں، بلکل غلط ہے۔ہم نے بی آر ٹی کی 2 کلو میٹر تک توسیع بھی کی۔ لاگت پر کی جانے والی باتیں

مناسب نہیں۔انہوں نے مزید کہا ہو سکتا ہے جب ڈالر واپس کرنے کا وقت آئے تب 75روپے کا ہوجائے۔ شوکت یوسفزئی نے پھر سے اسرار کرتے ہوئے کہا کہ ڈالر کی قیمت میں اضافے سے ہمیں فائدہ ہورہا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *