کئی سالوں کا انتظار ختم ۔۔بنی گالہ میں جشن کا سماںعمران خان کو بڑی خوشخبری سنا دی گئی

کئی سالوں کا انتظار ختم ، بنی گالا میں جشن کا سما ں ‘‘

وزیر اعظم عمران خان کوبڑی خوش خبری سنا دی گئی ۔۔۔۔ تحریک انصاف کے لئے آج بہت بڑیخوش خبری ہے۔ تازہ ترین میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیر اعظم عمران خان

کے خلاف کئی سالوں سے چل رہا ہتک عزت کا دعویٰعدالت نے خارج کر دیا ہے ۔ تفصیلات کے مطابق عمران خان کے خلاف ہتک عزت کا دعویٰ ایفیڈرین کیس میں حنیف عباسی نے 2014 دائرکیا تھا،ایڈیشنل سیشن جج راولپنڈی ملک شفیق احمد نے دعویٰ خارج کرنے کا فیصلہ سنا دیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق

راولپنڈی کی عدالت نے وزیراعظم عمران خان کیخلاف ہتک عزت کا دعویٰ خارج کردیا، عمران خان کے خلاف ہتک عزت کا دعویٰ ایفیڈرین کیسمیں حنیف عباسی کی طرف سے دائرکیا تھا۔ تاہم ایڈیشنل سیشن جج راولپنڈی ملک شفیق احمدنے دعویٰ خارج کرنے کا فیصلہسنا دیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی

جانب سے وکیل شاہد گوندل عدالت میں پیش ہوئے۔ وکیل نے عدالت میں مئوقف اختیار کیا کہ حنیف عباسی ایفیڈرین کیس میں عدالت سے س، زا یافتہ ہے۔ اس لیے س، زا یافتہ

مج، رم کسی کے خلاف ہتک عزت کا دعویٰ کیسے دائر کرسکتا ہے؟عمران خان کی حنیف عباسی کے خلاف گفتگو قانونی تھی۔قانون کے مطابق گفتگو کرنے سے کسی کی ہتک عزت نہیں ہوتی۔س، زا یافتہ شخص کی ضمانت ہونے سے ج، رم ختم نہیں ہوسکتا۔حنیف عباسی کی جانب سے عمران خان کیخلاف دعویٰ دھرنے کے دنوں میں 2014ء میں دائر کیا گیا۔

سے اہم روحانی شخصیت بشریٰ بی بی تھیں۔حبیب اکرم کا کہنا ہے کہ 2013ء کے انتخابات کے بعد پاکپتن کے خاندان کی بشریٰ بی بی سے عمران خان کی ارادت شروع ہوئی۔ پاکپتن سے ہی انہیں پہلی بار یہ خوشخبری ملی کہ وہ اس ملک کے وزیراعظم بن جائیں گے۔نواز شریف کے لیے

پانامہ سکینڈل کی خدائی سو موٹو کی اصطلاح بھی انہیں پاکپتن کے شہر سے ملی۔ایک ہاتھ کی مخصوص انگلی میں چھوٹے ہاتھ کے نگینے کی انگوٹھی اور دوسرے ہاتھوں میں تسبیح بھی انہی ملاقاتوں کی دین ہے۔عمران خان کو پاکپتن سے اتنی تسکین میسر آئی کہ

ارادت کا تعلق ازدواجی رشتے میں بدل گیا اور بشریٰ بی بی عمران خان کے گھر کا چراغ ہو گئیں اس کے بعد عمران خان کے دن پھرنے لگے اور وہ پاکستان کے وزیراعظم بن گئے۔ دوسری جانب عمران خاں کی وفاقی حکومت نے اپنا دوسرا بجٹ پیش کر دیا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *