ایران نے پاکستان کو بجلی فراہم کرنے کی پیشکش کر دی

اسلام آباد) پاکستان میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ دوبارہ شروع ہونے کے بعد

ایران نے پاکستان کو بجلی فراہم کرنے کی پیش کش کر دی۔میڈیارپورٹس کے مطابق وفاقی وزیر توانائی حماد اظہر سے ایرانی سفیر محمد علی حسینی نے ملاقات کی ۔ ملاقات میں دونوں ممالک کے توانائی کے شعبوں سےمتعلق امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ ملاقات کے دوران ایرانی سفیر نے کہا کہ

ایران پاکستان کو مزید بجلی فراہم کرنے کے لئے تیار ہے، بجلی فراہمی کےسلسلے میں انفراسٹرکچرتعمیر کیا جا چکا ہے۔ ایرانی سفیر نے اس بات پر زور دیا کہ اضافی بجلی فراہمی منصوبے کے جلد آغاز کیلئے متعلقہ اداروں میں قریبی روابط کی ضرورت ہے۔علاوہ ازیں وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے بجلی و پٹرولیم تابش گوہر نے واضح کیا ہے کہ

توانائی کے شعبہ کی بہتری کیلئے بجلی کی پیداوار ، تقسیم و ترسیل کی مربوط اور موثر منصوبہ بندی کی ضرورت ہے ،ملک کو جب بجلی کی ضرورت تھی تو بہت سے آئی پی پیز سے پیداوار دستیاب نہیں تھی،معاملے کی انکوائری کرائیں گے۔ نیشنل الیکٹرسٹی پلان 2021سے متعلق مشاورتی سیشن سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ

نیشنل الیکٹرسٹی پالیسی 2021 کی مشترکہ مفادات کونسل نے منظوری دی اس کے علاوہ قابل تجدید توانائی کا انرجی مکس میں حصہ بڑھانے کے لئے 2019 میں قابل تجدید توانائی کی منطوری دی گئی اور پن بجلی کو بھی قابل تجدید توانائی کا حصہ بنایا گیا ہے۔نہ ہو، نہیں چاہتے کہ کوئی ہماری سرزمین کوپڑوسی ملک کےخلاف استعمال کریں۔ترجمان طالبان نےکہا کہ

پاکستان ہمارا برادر مسلم ملک اور دوسرا گھر ہے ہماری اقدار مشترکہ ہیں، پاکستان لاکھوں مہاجرین کی میزبانی کر رہا ہے،پاکستان کے ساتھ اچھے تعلقات کے خواہشمند ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ دوحا میں ہماری مذاکراتی ٹیم موجود ہے، ہم امید کرتے ہیں کہ مذاکرات کامیاب ہوں گے۔ذبیح اللہ مجاہد نے کہا کہ خواتین کو تمام شرعی اور معاشی حقوق دیں گے، تمام شہریوں کے حقوق

کا تحفظ کریں گے۔انہوں نے کہا کہ داعش گروپ ہمارا دشمن ہے تمام اسلامی ممالک اس کے خلاف ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ مذاکرات کے ذریعے اسلامی نظام لانا چاہتے ہیں، کابل میں بزور طاقت نہیں آئیں گے، طاقت میں ہونے کے باوجود مذاکرات کو ترجیح دے رہے ہیں۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *