پیوٹن نے ایک بار پاکستان کے بارے میں کیا بہت ہی بڑی پیشنگوئی کی تھی ؟

پیوٹن نے ایک بار پاکستان کے بارے میں کیا بہت ہی بڑی پیشنگوئی کی تھی ؟

لاہور نامور کالم نگار علی عمران جونیئر اپنے ایک بہت اہم کالم میں رقمطراز ہیں ۔۔۔کہتے ہیں روسی صدر پیوٹن نے ایک بار یہ کہا تھا کہ، پاکستان ہی پاکستانیوں کے لئے قبرستان ہے،وجہ پوچھنے پر پیوٹن نے یہ کہا،جب کوئی پاکستانی امیر ہوجاتاہے تووہ اپنا ہی بینک اکاؤنٹ سوئٹزر لینڈمیں رکھتا ہے۔ اور علاج معالجہ کے لئےامریکہ اور برطانیہ ہی جاتاہے۔ اور

شاپنگ دوبئی اور یورپ سے کرتا ہے۔ اور چائینہ کی چیزیں بھی خریدتا ہے۔ عبادت مکہ اور مدینہ میں بھی کرتا ہے۔ اوراولاد یورپ میں تعلیم حاصل کرنے کے لئے بھیجتا ہے۔ اور سیر کرنے کے لئے امریکہ برطانیہ اور کینڈا کا سفر بھی کرتا ہے۔ اور جب انتقال کر جاتا ہے تو وہ اپنے آبائی وطن پاکستان ہیدفن ہوتا ہے۔ اور

جب پاکستانی پاکستان کو قبرستان سمجھتے ہیں تو پھر یہ سوچو، اور قبرستان کیسے ترقی کرسکتا ہے؟؟خوش رہیں اور خوشیاں ہی بانٹیں۔۔والے جانتے ہیں کہ یہ دو سال بھی بےکیف نہیں گزر سکتے۔ پاکستان میں سیاست حادثات اور واقعات کی محتاج ہوتی ہے۔ ہو سکتا ہے کہ کل ہی کوئی ایسا حادثہ یا واقعہ ہو رونما جائے جس سے حکومت بیک فٹ پر چلی جائے، اپوزیشن جارحانہ رویہ اختیار کر لے، عوامی بےچینی بڑھ جائے، جلسے

جلوس شروع ہو جائیں، ایسا ہم نے پہلے بھی کئی بار دیکھا ہے، ایسا پھر بھی ہو سکتا ہے۔پاکستان جیسے تیسری دنیا کے ملک میں بیرونی عوامل بھی بہت اثر انداز ہوتے ہیں۔ اگر تو پاکستان دنیا کی توقعات کے مطابق چلا تو پاکستان کے معاملات میں مداخلت کا امکان کم ہے لیکن اگر ہم پر ڈبل گیم کے الزامات لگے تو

اگلے انتخابات پر دنیا بھر کی نظریں ہوں گی اور شاید یہ دبائو بھی ہو گا کہ انتخابات میں کسی قسم کی غیرسیاسی مداخلت نہ ہو۔ یہ بھی امکان موجود ہے کہ امریکہ ماضی کی طرح پاکستان کی سیاست میں بھرپور دلچسپی کا اظہار کرے اور ماضی کی طرح انتخابات کے پراسس کی نگرانی بھی کرے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.