اسلام آباد میں سفارتکار کی بیٹی کیساتھ ایک اور افسوسناک واقعہ

اسلا م آباد…‏اسلام آباد میں کوہسار کے علاقے سیکٹر

ایف 7 فور میں سابق سفارت کار کی 22 سالہ بیٹی کو ق ت ل کردیا گیا۔پولیس کے مطابق 22سالہ لڑکی کوتیز د ھ ا ر آ ل ے سے ق ت ل  کیا گیا اور ق ت ل  میں ملوث شخص کو موقع واردات سے گرفتار کرلیا ہے۔پولیس نے بتایا کہ ق ت ل  کی گئیلڑکی سابق سفارت کار کی بیٹی ہے جبکہ سینیئر افسران نے

جائے وقوعہ پر پہنچ کر تحقیقات شروع کردی ہیں۔پولیس کے مطابق لڑکی کے ق ت ل  کا مقدمہدرج کیا جارہا ہے۔دوسری جانب : وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ افغان سفیر کی بیٹی والا واقعہ ہماری تفتیش کے مطابق اغوا کا کیس نہیں ہے۔ اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ

افغان سفیر کی بیٹی کا کیس حکومت لڑے گی لیکن ایک کیس کی بنیاد پر افغان سفیر کو نہیں جانا چاہیے تھا، چاہتے ہیں افغان سفیر خود تحقیقات کا حصہ بنیں، ہم نے واقعے کی ایف آئی آر خود درج کی۔میں امن و امان کا مسئلہ نہیں ہے ،وزیر اعظم نے کل تمام آئی جیز ،

سکیورٹی ایجنسیز کو حالات پر گہری نظر رکھنے کی ہدایت کی ، افغان سفیر کو اس تحقیقات کا حصہ بننا چاہئے جس کی انہوں نے درخواست کی ہے ، افغان سفیر کی بیٹی نے خود ایف آئی آر درج کرائی ، حکومت کارروائی کر رہی ہے ، محترمہ خود چلی گئی ہیں ، ان کا کیس خود حکومت لڑے گی ۔چاروں ٹیکسی ڈرائیور

محنت کش اور مزدور ہیں ، ان کا کوئی مجرمانہ ریکارڈ نہیں ہے ۔ راولپنڈی اور اسلام آباد کی 700گھنٹے کی فوٹیج دیکھی ہے ، ہمارے مطابق معاملہ اغواءکا نہیں ۔وزیر داخلہ نے کہا کہ ہماری بد نصیبی ہے کہ کشمیر میں مریم نواز کی الیکشن مہم اپنی جماعت اور نواز شریف کے حق میں نہیں بلکہ عمران خان کی مخالفت

میں ہے ،انہوں نے ابھی سے اپنی شکست تسلیم کر لی ہے اسی لئے کہتی پھر رہی ہیں کہ اگر پی ٹی آئی جیتی تو اسلام آباد میں دھرنا دیں گی ، وہ گزشتہ سال سے

حکومت کے خاتمے اور دھرنوں کا اعلان کر رہی ہیں ۔ایک صحافی کے سوال کے جواب میں شیخ رشید کا کہنا تھا کہ داسو واقعے کی تحقیقات مکمل ہو گئی ہیں ، چین کی حکومت مطمئن ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *