کرونا تو صرف بہانہ تھا، پاکستان اصل نشانہ تھا متحدہ عرب امارات پاکستان سمیت 12 ملکوں پر ویزٹ ویزے کیوں بند کیے اصل بات تو اب سامنے آئی

متحدہ عرب امارات نے گزشتہ ماہ کی 18تاریخ کو پاکستانیوں پروزٹ ویزے

کی پابندی عائد کردی تھی۔ یہ فیصلہ پاکستان سمیت 12ملکوں کےلئے کیا گیا تھا۔ اور اس کی وجہ حیران کن طور پر کرونا وائرس کی وبا بتائی گئی تھی لیکن تعجب کی بات یہ تھی کہ ان ملکوںمیں بھارت شامل نہیں تھا۔ جبکہ بھارت دنیا بھر میں

کرونا وائرس سے ہلاکتوں کے لحاظ سے دوسرے نمبر پر آگیا ہے۔ چنانچہ یہ کہنا کہ پاکستان سمیت 12ملکوں پرپابندی کرونا وائر س کی وجہ سے لگائی تھی ۔ سراسر غلط تھا۔اب اس بارے میں حقائق سامنے آئے ہیں۔ دبئی میں مقیم ایک پاکستانی شہری کا کہنا ہے کہ

یو اے ای حکومت اسرائیل سے تعلقات قائم ہونے کے بعد سمجھتی ہے کہ پاکستان ،ترکی ، افغانستان سمیت 12ملکوں کے شہری کسی ایسی سرگرمی کا ارتکاب کرسکتے ہیں جن سے متحدہ عرب امارات میں ان تعلقات کی وجہ سے

عدم استحکام پھیل سکتا ہے۔رسید کی وصولی پر ڈھائی روپے چارج کئے جارہے ہیں جبکہ محض بیلنس معلوم کرنے پر بھی چارجز وصول کئے جارہے ہیں۔ اس ضمن میں اسٹیٹ بینک کا کہنا ہے کہ

مرکزی بینک نے اے ٹی ایم رسید جاری کرنے پر چارجز عائد کرنے کوئی ہدایت نہیں کی ہے،تاہم بینک اپنی خدمات کے عوض صارفین سے چارجز لینے میں آزاد ہیں، بینک جو بھی چارجز عائد کرتے ہیں وہ شیڈول آفچارجز میں شائع ہوتے ہیں۔ ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ

اسٹیٹ بینک نے بعض خدمات پر چارجز کی حد مقرر کی ہوئی ہے، بینک اپنی خدمات کے عوض چارجز وصول کرنے کے مجاز ہیں، بشرطیکہ وہ اسٹیٹ بینک کی کسی ہدایت سے متصادم نہ ہوں۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.