طلباء کو کتنے فیصد اضافی نمبرز دیئے جائیں گے؟ وفاقی وزیر تعلیم نے طالب علموں کا ایک اور مسئلہ حل کر دیا

طلباء کو کتنے فیصد اضافی نمبرز دیئے جائیں گے؟ وفاقی وزیر تعلیم نے

طالب علموں کا ایک اور مسئلہ حل کر دیااسلام آباد..) وفاقی وزیر برائے تعلیم شفقت محمود کا کہنا ہے کہ امتحانات شیڈول کے مطابق ہوں گے، تعلیمی ادارے 50 فیصد حاضری کے ساتھ کھلیں گے۔ اے آر وائی نیوز کے مطابق وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود نے نیوز کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ 8 اگست تک سندھ میں

تعلیمی ادارے بند ہیں، سندھ کے علاوہ تمام صوبوں میں اسکول بتدریج کھلتے جائیں گے انہوں نے کہا کہ سندھ میں امتحانات کا شیڈول 8 اگست کے بعد آئے گا، سندھ کے علاوہ دیگر صوبوں میں امتحانات جاری رہیں گے،طلبا کو امتحانات میں کمپلسری مضامین میں 5 فیصد اضافی نمبرز دیے جائیں گے۔شفقت محمود نے کہا کہ

وزارئے تعلیم کانفرنس کا آئندہ اجلاس 25 اگست کو ہوگا، وزارت تعلیم جو بھی فیصلہ کرے گی اس پر عمل ہوگا، افواہوں پر کان نہ دھرے جائیں۔وفاقی وزیر نے کہا کہ ہماری کوشش ہے بچوں کی صحت کے ساتھ تعلیم کا بھی خیال رکھا جائے، کورونا کے باوجود تعلیم کا سلسلہ قائم رکھنا ہے۔انہوں نے کہا کہ 18 سال سے زائد عمر کے طلبا،

اساتذہ کی ویکسینیشن پر زور دیا ہے،
اسکولز سے متعلق عملے کی بھی ویکسینیشن ضروری ہے، 31 اگست تک تمام عملے کی ویکسینیشن ہوجانی چاہیے، ملک بھر کی جامعات میں طلبا اور اساتذہ کی ویکسینیشن 31 اگست تک لازمی قرار دی گئی ہے۔کو شارٹ کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا۔ طلبا کا کہنا ہے کہ

منظور شدہ شارٹ کورسز کی تیاری 12 دن میں کیسے کریں ؟ پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ کا موقف ہے کہ تعلیمی بورڈ کی جانب سے تاخیر سے نصاب دیا گیا ۔کورونا کی وجہ سے تعلیمی ادارے بند ہونے کے باعث نصاب کو شارٹ کیا گیا تھا۔واضح رہے کہ

کورونا کی وجہ سے جہاں دیگر شعبہ جانت متاثر ہو تھے وہیں تعلیمی سرگرمیاں بھی کافی عرصے تک معطل رہیں جس کے باعث طلباء کا ہی حرج نہیں ہوا بلکہ تعلیمی شعبوں سے منسلک پرائیویٹ ادارے بھی شدید متاثر ہوئے ۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.