ستر سال تک جوان رہنے کی

اس تحریر میں ایک ایسی چائے بنانا سکھائیں گے جس کے بے شمار فوائد ہیں یہ چائے آپ کی جلد کو جوان رکھے گی

جسم کو فٹ رکھے گی اعصابی کمزوری ختم کرے گی دل کی بیماریوں سے بچائے گی جسم میں ہونے والے دردوں میں آرام دے گی اور جن لوگوں کا بلڈ شوگر لیول ہائی ہے تووہ بھی اس کے استعمال سے اپنا شوگر لیول کم کرسکتے ہیں انفرٹیلیٹی کے لئے بھی یہ عرصہ دراز سے استعمال ہوتی آرہی ہے

خراب موڈ بھی اس چائے کے پینے سے خوشگوار ہوجاتا ہے اور قوت مدافعت بھی بڑھتی ہے مینز کے یہ چائے جادو سا اثر رکھتی ہے یہ چائے بنی گی کیسے ؟ سب سے پہلے آپ نے آدھا کپ پانی لینا ہے سادہ پانی آپ لیں گے اب پانی کو کسی بھی پین میں ڈال دیں اور گرم کریں لیکن پانی

کو مکمل گرم نہیں کرنا بس جب ہلکا ہلکا گرم ہوجائے تو آپ نے اس میں را ملک یعنی کچادودھ آدھا کپ ڈالنا ہے پھر آپ نے آنچ بالکل دھیمی کر دینی ہے اب آپ نے اس میں آدھا چائے والا چمچ چائے کی پتی ڈالنی ہے کوئی سی بھی برانڈ کی پتی آپ لے سکتے ہیں

اب آپ نے اس میں اسگند ناگوری پاؤڈر اسے اشفاء گندل کی جڑ کا پاؤڈر بھی کہتے ہیں ہر بل اسٹور سے یہ مل جاتا ہے آپ نے آدھا چائے کا چمچ اس کے پاؤڈر کا ڈالنا ہے اب آپ اسے پکائیں گے دھیمی آنچ پر اتنا پکائیں کہ ایک سے دو ابال آجائیں پھر آنچ بند کردیں اور اسے کسی کپ

وغیرہ میں نکال لیں ذائقے کے لئے آپ اس میں چینی یا شہد ڈال سکتے ہیں جو بھی آپ کو میسر ہو آپ وہ ڈال دیں اور یہ ہماری چائے بن کر ریڈی ہے اسے آپ نے دن میں کسی بھی وقت پی لینا ہے

جب بھی آپ کو سہولت ہو آپ اسے پی لیں اور رات میں بھی یہ چائے آپ پی سکتے ہیں کیونکہ اس سے نیند بھی بہت اچھی آتی ہے اسے ح ا م ل ہ خواتین بچے یا دودھ پلانے والی خواتین اور ہائی بی پی یا تھائی رائیڈ کے مریض استعمال نہیں کریں گے۔باہر کھانا کھانے کا رواج عام ہو چکا ہے۔ہر خاص وعام بازار کے کھانوں کا شوقین نظر آتا ہے۔جگہ جگہ فوڈ اسٹریٹ قائم ہو چکی ہیں۔جن میں طرح طرح کے کھانے دستیاب ہوتے ہیں۔

ہر ویک اینڈ پر باہر جاکر کھانا کھانا سب سے مقبول تفریح بن چکی ہے۔باہر کے کھانے دیکھتے ہی منہ میں پانی بھر آتا ہے لیکن یہ کس طرح تیار ہوتے ہیں اکثر لوگ اس سے نا واقف ہیں۔جب ہم اپنا کھانا خود تیار کرتے ہیں تو اس بات کو یقینی بناتے ہیں کہ اس میں استعمال ہونے والی ہر

چیز صاف ستھری اورخالص ہو۔اس کی تیاری میں کوئی مضر صحت چیز شامل نہ ہو۔جب ہم یہی چیز باہر کھاتے ہیں تو وہ اچھی تو بہت لگتی ہے لیکن اس کے صاف ستھراہونے کی کوئی گارنٹی نہیں ہوتی۔فوڈ اسٹریٹ اور ریستورانوں میں تیار شدہ یہ کھانے صحت کے لئے بہت نقصان دہ ہیں۔جو انسانی جسم کو نقصان پہنچانے کا باعث بنتے ہیں۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.