”صبح اٹھتے ہی سستی تھکاوٹ، کام میں دل نہ لگنا تمام مسائل کا حل“

طاقتی یا توانائی کی کمی ہے اور یہ کھانے پینے کی غلط عادتوں کے نتیجہ میں پیدا ہوتی ہے۔ لذیذ کھانے عموماً غذائیت سے محروم ہوتے ہیں۔ مثلاً سفیدچینی‘ پسے ہوئے اناج‘ سفید آٹے کے پکوان (سفید آٹے سے مراد میدہ) پراسیس کیے ہوئے کھانے جسمانی نظام پر بہت برے اثرات مرتب کرتے ہیں۔ غذائوں کو غیر فطری انداز میں پکا کر کھانے سے وہ وٹامنز اور معدنی اجزاءمیسر نہیں آتے جن کی ہمارے جسم کو ضرورت ہوتی ہے۔

چنانچہ توانائی میں کمی آجاتی ہے کچھ مخصوص قسم کی ذہنی جسمانی کیفیات جن میں کم بلڈپریشر‘ بلڈشوگر میں کمی‘ کسی قسم کی انفیکشن‘ جگر کی خرابی ادویات اور غذائوں کی الرجی‘ بے خوابی‘ ذہنی تنائو اور جذباتی ناآسودگی شامل ہیں۔ ہوا‘ مٹی اور پانی کی آلودگی سے جسم میں پیدا ہونے والے زہریلے مادوں سے بھی جسم تھکاوٹ اور اضمحلال کا شکار ہوجاتا ہے۔ تھکاوٹ پژمردگی اور اضمحلال کے شکار مریض کو ایسی غذائیت بخش غذائیں کھانا چاہئیں جو جسم کو توانائی فراہم کریں

بیجوں کی صورت میں استعمال کرنے سے تھکاوٹ دور ہوتی ہے اور توانائی ملتی ہے اناج کے یہ بیج مکئی کے دانے‘ گندم کے دانے‘ رائی کے بیج‘ جو اور جوار وغیرہ ہیں۔ ان کو پسوانے کے زیادہ عرصہ بعد استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ ان پکے اناج میں مکمل غذائیت ہوتی ہے جو اچھی صحت کیلئے ضروری ہوتی ہے۔ زیادہ پسے ہوئے‘ چھنے ہوئے اناج بھی غذائیت سے محروم ہوجاتے ہیں۔ مثلاً گندم کے آٹے میں سے سوجی نکال لی جائے اور اسے چھان کر استعمال کیا جائے

تو مطلوبہ فوائد حاصل نہیں ہوتے۔ سفید آٹا یعنی میدہ لذت فراہم کرتا ہے مگر غذائیت سے محروم ہونے کے ساتھ ساتھ انتڑیوں کیلئے مفید نہیں ہوتا۔ عمومی صحت کے علاوہ تھکاوٹ کے مرض پہ قابو پانے کیلئے بھی معدنی اجزاءبہت اہم ہوتے ہیں۔ پوٹاشیم خاص طور پر تھکاوٹ سے محفوظ رکھتی ہے۔ پتوں پر مشتمل سبزیاں‘ مالٹے‘ آلو اور پھلیاں اس معدنی اجزا کی فراہمی کا نمایاں ذریعہ ہیں۔ کیلشیم سکون اور آسودگی مہیا کرتی ہے اور بے خوابی اور تنائو دور کرنے میں مدد دیتی ہے۔

بے خوابی اور تنائو دونوں تھکاوٹ کا سبب بنتی ہیں۔ دودھ اور ددھ کی مصنوعات‘ پتوں پر مشتمل سبزیاں‘ تلوںکے بیج‘ بادام‘ جئی اور اخروٹ کیلشیم فراہم کرتے ہیں۔ سوڈیم اور زنک بھی تھکاوٹ کے علاج میں مفید ہیں۔ اجمود‘ کھیرا‘ سلاد کے پتے اور سیب سوڈیم کے معقول ذرائع ہیں۔ پھلیاں‘ سالم اناج کی مصنوعات اور کدو کے بیج زنک کی وافر مقدار مہیا کرتے ہیں۔تھکاوٹ دور کرنے کا موثر گھریلو علاج کھجور کا استعمال ہے جو لوگ اضمحلال اور تھکاوٹ کے شکار رہتے ہیں

انہیں باقاعدگی سے کھجور کھانا چاہیے۔ پانچ سے سات دانے کھجور رات کو آدھا کپ پانی میں بھگو دیں اور صبح ان کی گٹھلیاں نکال کر اسی پانی میں مسل دیں اسی گاڑھے مشروب کو ہفتہ میں کم از کم دو بار ضرور پئیں۔ یہ پھل بھی تھکاوٹ دور کرنے کیلئے مفید ہے۔ چکوترہ اور لیموں کا ایک گلاس جوس اضمحلال دور کرنے کا بہترین ذریعہ ہے۔ دن بھر کی تھکاوٹ کے بعد یہ مشروب پینا تازہ دم کردیتا ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.